77

طالبات کو ہراساں کرنے کے خلاف لسبیلہ پریس کلب حب کے سامنے طلباء کی جانب سے احتجاج

حب ( محمد یعقوب ۔ پریس رپورٹر ) جامعہ بلوچستان یونیورسٹی میں طالبات کو ہراساں کرنے اور باخبر ذرائع کے مطابق حب کے ڈگری کالج میں ایک کلرک کی جانب سے طالبات کو بھی ہراساں کرنے کے خلاف لسبیلہ پریس کلب حب کے سامنے طلباء کی جانب سے احتجاج کیا گیا

حب۔جامعہ بلوچستان کے سب سے بڑے تعلیمی درسگاہ میں طالبات کو جنسی ہراساں کرنے کے خلاف مختلف علاقوں سمیت بلوچستان کے صنعتی شہر حب میں بھی لسبیلہ پریس کلب حب کے سامنے طلباء کی جانب سے احتجاج کیا گیا اور ریلی نکالی گئی طلباء نے ہاتھوں میں پلے کارڈز اٹھا رکھے تھے جن پر مختلف نعرے درج تھے اور شدید نعرے بازی کی اس موقع پر صدر انصاف اسٹوڈنٹ فیڈریشن کے صدر محسن لانگو نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ماوں بہنوں کی عزت ہم سب کی عزت ہے اور اس واقعہ میں ملوث جامعہ بلوچستان کے وائس چانسلر کو عہدے سے ہٹایا جائے اور انکے خلاف سخت قانونی کارروائی کی جائے طالبات کی بلیک میلنگ میں ملوث افراد کو گرفتار کرکے پورے گروہ کو بے نقاب کیا جائے جبکہ انکا یہ بھی کہنا تھا کہ جامعہ بلوچستان کے بعد حب کے ڈگری کالج میں بھی ایک کلرک کی جانب سے طالبات کو جنسی ہراساں کرنے کے اطلاعات ہیں اور ہم اس حوالے سے مزید معلومات لے رہے ہے


یہ خبر ( محمد یعقوب ۔ پریس رپورٹر ) نے ارسال کی

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں