54

کالے ہرن کے شکار پر پابندی، پنجاب حکومت سے رپورٹ طلب

لاہور ہائیکورٹ نے کالے ہرن کے شکار پر پابندی سے متعلق درخواست پرپنجاب حکومت سے رپورٹ طلب کرلی ہے ۔

جسٹس شمس محمود مرزا نے شیراز ذکا ایڈوووکیٹ کی درخواست پر سماعت کی۔

عدالت نے پنجاب حکومت کے وکیل سے استفسار کیا کہ پنجاب حکومت نے کالے ہرن کی نسل کو بچانے کیلئے کیا اقدامات کیے ہیں؟

پنجاب حکومت کے وکیل نے عدالت کو بتایا کہ کالے ہرن کی نسل کے تحفظ کیلئےوائلڈ لائف کمیشن کام کر رہا ہے۔

لاہور ہائیکورٹ نے حکم دیا کہ کمیشن اپنی سفارشات آئندہ سماعت پر پیش کرے۔ عدالت نے پنجاب حکومت سے اس ضمن میں رپورٹ بھی طلب کرلی ہے۔

درخواست گزار نے موقف اختیار کیا تھا کہ کالے ہرن کے نسل کی بقا کے لئے حکومت اقدامات کرنے میں ناکام ہے۔کالے ہرن کی نسل کو شدید خطرات لاحق ہیں، غیر ملکیوں کو غیر قانونی طور کالے ہرن کے شکار کی اجازت دی جاتی ہے۔

درخواست گزارشیراز ذکاء نے استدعا کی کہ عدالت حکومت کو کالے ہرن کے شکار پر پابندی عائد کرنے کا حکم دے۔

سکھرمیں نایاب نسل کی ڈولفن خطرے میں

درخواست پر مزید کارروائی 17 جون کو ہوگی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں