32

ہوائی سفر کی تاریخ کا انوکھا واقعہ، پائلٹ مسافروں کو جرمنی کی بجائے برطانیہ لے گیا

مسافر بھی راستے سے انجان ہو تو رکشے، ٹیکسی کا غلط جگہ پر پہنچ جانا تو سمجھ آتا ہے لیکن آپ یہ سن کر حیران رہ جائیں گے کہ برٹش ایئرویز کی ایک پرواز کا پائلٹ اپنے جہاز کو جرمنی کی بجائے سکاٹ لینڈ کے دارالحکومت ایڈنبرا لے گیا۔

میل آن لائن کے مطابق برٹش ایئرویز کی اس پرواز بی اے 3271نے صبح پونے آٹھ بجے لندن سٹی ایئرپورٹ سے اڑان بھری۔

اسے جرمنی جانا تھا لیکن پائلٹ نے سوا گھنٹے بعد جب سکاٹ لینڈ کے دارالحکومت کے قریب پہنچ کر اعلان کیا کہ ہم ایڈنبرا ایئرپورٹ پر اترنے والے ہیں، تو مسافر بھونچکا رہ گئے۔ وہ تو جرمنی کی پرواز میں سوار ہوئے تھے، یہ سکاٹ لینڈ کیسے پہنچ گئی۔

رپورٹ کے مطابق واقعہ یہ ہوا کہ ایوی ایشن کی طرف سے اس پائلٹ کو غلط فلائٹ پلان دے دیا گیا تھا

جس کے باعث وہ جرمنی کی بجائے سکاٹ لینڈ چلا گیا۔ پرواز ایڈنبرا میں لینڈ کرنے کے بعد پریشان حال مسافر نے سوشل میڈیا پر یہ واقعہ پوسٹ کرنا شروع کیا تو ہنسی کا ایک طوفان آ گیا،

کیونکہ یہ ہوائی سفر کی تاریخ کا ایک منفرد واقعہ تھا۔ سن ٹرین نامی ایک مسافر نے اپنے ٹوئٹر اکاﺅنٹ پر لکھا کہ ”کوئی شخص وضاحت کر سکتا ہے کہ میری پرواز جسے جرمنی کے شہر ڈوسیلڈورف جانا تھا، ایڈنبرا کیسے پہنچ گئی؟ ہم میں سے کسی مسافر نے بھی میرے خیال میں اس پراسرار ٹریول لاٹری کا ٹکٹ نہیں خریدا تھا۔“

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں