سکردو : یونس یوسف کی نیوز رپورٹ

یونس یوسف ۔ نمائندہ

ذاکر ایڈوکیٹ
وحدت امیدوار میثم کاظم کے حق میں دستبردار،

ذاکرایڈوکیٹ

خان صاحب۔۔۔۔مجھے آپ پر فخر ہے۔ہم ناامید نہیں۔۔۔جس طرح آپ نے تبدیلی کے لیے 22 سال انتظار کیا میں اور میری ٹیم بھی حلقہ دو میں حقیقی تبدیلی کے لیے پانچ سال انتظار کرینگے ۔

ہم ہارے نہیں بلکہ مزید محنت اور لگن کے ساتھ آگے بڑھینگے۔

سکردو حلقہ نمبر 2 ، ذاکر ایڈووکیٹ کاظم میثم کے حق میں دستبردار ہو گئے

سکردو حلقہ نمبر دو سے تعلق رکھنے والے پی ٹی آئی کے نوجوان سیاسی رہنما ذاکر ایڈوکیٹ وحدت المسلمین کے امیدوار کاظم میثم کے حق میں دستبردار ہو گئے، پریس کلب سکردو میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ذاکر ایڈووکیٹ نے کہا کہ پارٹی قیادت نے حلقہ نمبر دو میں وحدت المسلمین کے ساتھ سیٹ ایڈجسمنٹ کے حوالے سے اعتماد میں نہیں لیا تھا جس کے باعث میں نے آزاد حیثیت میں الیکشن لڑنے کا فیصلہ کیا تھا

کیونکہ میرے ورکرز نے الیکشن کی بھرپور تیاری کی ہوئی تھی، انہوں نے کہا کہ وفاقی سطح پر ایم ڈبلیو ایم اور تحریک انصاف کی الائینس کے بعد گلگت بلتستان کی الیکشن میں بھی دونوں جماعتوں نے الائینس کا اعلان کیا تھا

جس کی وجہ سے حلقہ دو میں ایم ڈبلیو ایم کی حمایت کا فیصلہ ہوا ۔ یہ فیصلہ ہم سب کے لیے غیر متوقع تھا جس سے ہماری جدوجہد متاثر ہورہی تھی۔ اس فیصلے پر ہم سب نے ردعمل دکھایا اور ہر فورم پر اس پر آواز بلند کی کیونکہ یہ ہمارا حق تھا، بعد میں پارٹی قیادت نے مجھے قائل کیا ،

میں نے اپنے ورکرز اور علاقے کے عمائدین کو اعتماد میں لیکر دستبردار کا فیصلہ کیا تاہم دستبرداری کے عوض پارٹی قیادت سے علاقے کے اہم مسائل کے حل کا وعدہ لیا ہے۔ پارٹی قیادت سے ملاقات میں اپنی ذات کے لیے کچھ نہیں مانگا بلکہ کچھ سفارشات قیادت کے سامنے رکھی ہیں جن میں سکردو میں انجینریگ کالج، ٹیکنیکل کالج، گمبہ_سکردو میں ڈگری گرلز کالج، بوائز کالج گمبہ کی اپگریڈیشن ، قمراہ میں گرلز انٹر کالج، کچورا میں
بوائز انٹر کالج، زسنہ رنگا میں کالج، بشو میں
دس بیڈ ہسپتال، چنداہ تندل میں گرلز کالج ، پینے کے پانی کے بڑے پروجیکٹس شگری_کلاں ، رگیول ،آستانہ، نیورنگا کےلیے LGRD کی مدد سے سپیشل گرانٹ دلائی جائے گی وفاقی قیادت نے ان سفارشات کو منظور کرنے کا وعدہ کیا ہے جسکے نتیجے میں اس علاقے کی عوام کے روشن مستقبل اور وسیع تر مفات کے خاطر الیکشن سے دستبردار ہونے کا فیصلہ کیا گیا۔ انہوں نے مزید کہا کہ سیاست کچھ مہینوں یا سالوں پر نہیں بلکہ یہ نسلوں پر محیط رہنے والی چیز ہے۔ میں نے لوٹا بننے کے بجائے یا کسی طرح کے مالی مفاد کے برعکس نظریاتی طور پر اس جماعت کے کارکن رہنے کو ترجیح دیا۔

جس طرح میرے قائد عمران خان نے ایک حقیقی تبدیلی کے لیے 22 سال انتظار کیا میں اور میری حامی پانچ سال انتظار کرینگے اور انشاءاللہ حلقہ دو میں حقیقی تبدیلی لاکر دم لینگے۔ ایم ڈبلیو ایم کو حلقے میں جہاں بھی ہماری ضرورت پڑے ہم ان کے شانہ بشانہ ہونگے اور تعاون کرینگے۔ایم ڈبلیو ایم اور کاظم میثم کے لیے نیک خواہشات کا اظہار کرتے ہیں۔ اس موقع پر وحدت المسلمین کے امیدوار کاظم میثم نے بھی اپنے خیالات کا اظہار کیا۔

انہوں نے تعاون کی یقین دہانی اور دستبرداری پر ذاکر ایڈووکیٹ کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ حلقے کے مسائل کے حل کےلئے دونوں پارٹیوں کے کارکن اور رہنما مل کر جہدوجہد کرینگے۔ انہوں نے کہا کہ دونوں پارٹیاں نظریاتی حوالے سے قریب ترین ہیں اس لئے دونوں کے احداف بھی مشترک ہیں۔

یونس_یوسف_سپوٹرزذاکرایڈوکیٹ

نیوز ڈیسک

ای این این ٹی وی کا نیوز ڈیسک نمائندگان کی خبروں کے ساتھ ساتھ دنیا بھر میں رونما ہونے والے واقعات کو اپنی قارئین کے لیے اپنی ویب سائٹ پر شائع کرتا ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Next Post

ڈی سی کھرمنگ سے نوٹس کا مطالبہ

منگل اکتوبر 20 , 2020
(رپورٹر ۔ یونس یوسف) پرائمری سکول طولتی اور ڈی سی آفس کھرمنگ طولتی کے عین نزدیک طولتی عوام کا کہنا ہیں ۔ یہ جگہ کسی بھی وقت ناخوشگوار واقعے کا سبب بن سکتی ہے ہماری حکام بالا سے درخواست ہے کہ اس پہاڑی کو کوئی طریقہ کار کرکے نیچے گرانے […]

کیلنڈر

دسمبر 2020
پیر منگل بدھ جمعرات جمعہ ہفتہ اتوار
 123456
78910111213
14151617181920
21222324252627
28293031  
%d bloggers like this: