سانحہ روپیال میرج حال چکسواری آزاد کشمیر کی انکوائری کمیٹی کی رپورٹ مکمل

(نجیب الرحمان ۔ خصوصی نمائندہ)

سانحہ روپیال میرج حال چکسواری آزاد کشمیر کی انکوائری کمیٹی

کی رپورٹ مکمل

بلڈنگ کے ساتھ بغیر منصوبہ بندی کےچھیڑ چھاڑ کی گئی اور اضافی

لوڈ ڈالا گیا

جوحادثے کا سبب بنا ایک ماہ ہلٹی سے کام کیا گیا

رمضان المبارک سے لے کرحادثے تک مختلف تعمیراتی مرمتی کےکام

جاری تھے

بیسیمنٹ آر سی سی وال کو توڑا گیا

تاکہ مٹیریل بیسمنٹ میں پہنچایا جائےجملہ کام میں کسی ٹیکنیکل

شخص کو شامل نہیں کیا گیا ہر فلور پر تقریبا آٹھ سے دس انچ گیڑہ

اور مٹی وغیرہ پڑی تھی

جس کو پانی لگایا جاتا رہاجس سے وزن بڑھتا گیا

اسٹرکچر کے ساتھ چھڑ خانی کی گئی مگر کوئی پیمانہ نہیں رکھا

گیا۔ بلڈنگ ان ڈیزائن بنائی گئی

ریاض نامی شخص آرکٹیکٹ کا کلاسیفائیڈ انجینئر کا ثبوت نہیں

ٹوٹل کا مکدار بوٹا کرتا رہا اور جو پلر گرا اس میں 6۔ 7 سریے تھے

بنیادیں صرف تین سے چار فٹ رکھی گئی تھی

بلڈنگ کسی ڈیزائن کے بغیر بنائی گئی تھی

موقع پر آٹھ سے دس قسم کے کام جاری تھے

بلڈنگ کوڈنگپر عمل نہ ہوا تو مستقبل میں ایسے سانحات ہوتے رہیں

گے

بلڈنگ میں کسی قسم کا دھماکہ نہیں ہوا اس کا کوئی ثبوت نہیں ملا

بلڈنگ کمزورتھی اسکے کے ساتھ زیادہ چھیڑ-چھاڑ کی گئی

ٹوٹے ہوئے بھیم کو ایک پانی کے پائپ کے ساتھ سہارا دیا گیا

آر سی سی وال کو توڑناحادثے کا سبب بنا

بلڈنگ میں بلڈنگ کوڈنگ پرعمل نہیں ہوا

95 فیصد لوگ عطائی ہیں پیسےلے کرنقشے پاس کرتے ہیں

سانحہ روپیال کی انکوائری کمیٹی

ایس ای تنویر قریشی

اسسٹنٹ کمشنر منیر قریشی

انجینئر شہزادہ کی پریس بریفنگ

ای این این نیوز آزاد کشمیر


یہ خبر ( نجیب الرحمان ۔ خصوصی نمائندہ ) نے ارسال کی

نیوز ڈیسک

ای این این ٹی وی کا نیوز ڈیسک نمائندگان کی خبروں کے ساتھ ساتھ دنیا بھر میں رونما ہونے والے واقعات کو اپنی قارئین کے لیے اپنی ویب سائٹ پر شائع کرتا ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Next Post

جعفر آباد : سجاول - نیوز رپورٹر کی نیوز رپورٹ

بدھ اگست 12 , 2020
(سجاول – نیوز رپورٹر) اشتہار برائے عوام الناس یہ خبر (سجاول – نیوز رپورٹر) نے ارسال کی ہے۔

کیلنڈر

اکتوبر 2020
پیر منگل بدھ جمعرات جمعہ ہفتہ اتوار
 1234
567891011
12131415161718
19202122232425
262728293031  
%d bloggers like this: